ڈوبنا ہے اس سے یہ اقرار کر لینا مرا

محمد احمد رمز

ڈوبنا ہے اس سے یہ اقرار کر لینا مرا

محمد احمد رمز

MORE BYمحمد احمد رمز

    ڈوبنا ہے اس سے یہ اقرار کر لینا مرا

    پھر بہ آسانی سمندر پار کر لینا مرا

    کون پوچھے مجھ سے میری گوشہ گیری کا سبب

    کون سمجھے در کبھی دیوار کر لینا مرا

    ایک خوشبو بن کے گزرے سر سے سارے گرم و سرد

    اس کا چہرہ تھامنا اور پیار کر لینا مرا

    بن گیا لوگوں کی شان کج کلاہی کا سوال

    اپنے سر کو لائق دستار کر لینا مرا

    رمزؔ اس کو دے گیا اک طرز فریاد و فغاں

    بند آنکھوں کو لب اظہار کر لینا مرا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY