احساس زیاں ہم میں سے اکثر میں نہیں تھا

عقیل عباس جعفری

احساس زیاں ہم میں سے اکثر میں نہیں تھا

عقیل عباس جعفری

MORE BYعقیل عباس جعفری

    احساس زیاں ہم میں سے اکثر میں نہیں تھا

    اس دکھ کا مداوا کسی پتھر میں نہیں تھا

    وہ شخص تو شب خون میں مارا گیا ورنہ

    اس جیسا بہادر کوئی لشکر میں نہیں تھا

    اب خاک ہوا ہوں تو یہ احوال کھلا ہے

    شعلے کے سوا کچھ مرے پیکر میں نہیں تھا

    یہ واقعہ میرا تھا کہ تھا سانحہ میرا

    میں اپنے ہی گھر میں تھا مگر گھر میں نہیں تھا

    ہر عشق کے منظر میں تھا اک ہجر کا منظر

    اک وصل کا منظر کسی منظر میں نہیں تھا

    مأخذ :
    • کتاب : Urdu Quarterly BADBAAN (Pg. 205)
    • Author : Nasir Bagdadi
    • مطبع : E-2, 8/14, Mayar Square, Block No.14 Gulshane-e-Iqbal (Oct. - Dec. 2002,Issue No 8)
    • اشاعت : Oct. - Dec. 2002,Issue No 8

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY