Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ایک غم ہی تو یار ہے اپنا

ارشاد عزیز

ایک غم ہی تو یار ہے اپنا

ارشاد عزیز

MORE BYارشاد عزیز

    ایک غم ہی تو یار ہے اپنا

    دل جو ان پر نثار ہے اپنا

    ہم تو کب کے ہی مر گئے یارو

    کس کو اب انتظار ہے اپنا

    میرے زخموں کو جو کریدتا ہے

    بس وہی ایک یار ہے اپنا

    ساری دنیا تمہاری رکھ لو تم

    صرف پروردگار ہے اپنا

    ہم نے رکھا ہے جینے کے قابل

    زندگی پر ادھار ہے اپنا

    تیرے جانے کے بعد دل اب تو

    ایک اجڑا دیار ہے اپنا

    ہوش مندوں میں تم رہے یارو

    اہل دل میں شمار ہے اپنا

    مر بھی جاؤں تو ان کو کیا مطلب

    ایک طرفہ ہی پیار ہے اپنا

    مأخذ :
    • کتاب : آہٹ دیوان عزیز (Pg. 69)
    • Author : ارشاد عزیز
    • مطبع : مرکزی پبلیکیشنز،نئی دہلی (2022)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے