ایک ہنگامہ بپا ہے مجھ میں

آزاد گلاٹی

ایک ہنگامہ بپا ہے مجھ میں

آزاد گلاٹی

MORE BYآزاد گلاٹی

    ایک ہنگامہ بپا ہے مجھ میں

    کوئی تو مجھ سے بڑا ہے مجھ میں

    انکساری مرا شیوہ ہے مگر

    اک ذرا زعم انا ہے مجھ میں

    مجھ سے وہ کیسے بڑا ہے کہیے

    جب خدا میرا چھپا ہے مجھ میں

    میں نہیں ہوں تو مرا کون ہے یہ

    اتنے جنموں جو رہا ہے مجھ میں

    وہی لمحے تو غزل چھیڑتے ہیں

    جن کی گم گشتہ صدا ہے مجھ میں

    دشت ظلمات میں ہمراہ مرے

    کوئی تو ہے جو جلا ہے مجھ میں

    مآخذ :
    • کتاب : Dasht-e-Sada (Pg. 53)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY