فراز دار پہ اک دن سجا کے دیکھ ہمیں

مظفر رزمی

فراز دار پہ اک دن سجا کے دیکھ ہمیں

مظفر رزمی

MORE BYمظفر رزمی

    فراز دار پہ اک دن سجا کے دیکھ ہمیں

    ہمیں ہیں اہل وفا آزما کے دیکھ ہمیں

    ہم ایک نقش محبت ہیں تیرے دامن پر

    مٹا سکے تو زمانے مٹا کے دیکھ ہمیں

    ہمیں بجھا کے اندھیروں میں کیوں بھٹکتا ہے

    چراغ راہ تھے ہم پھر جلا کے دیکھ ہمیں

    تجھے بھلانے کا وعدہ تو کر لیا ہم نے

    مگر یہ شرط ہے تو بھی بھلا کے دیکھ ہمیں

    ہم اہل فن تو شگوفے ہیں رنگ و نکہت کے

    کسی گلاب کی صورت اگا کے دیکھ ہمیں

    رلا کے ہم کو سنا ہے کہ تو بھی روتا ہے

    ہمارے سامنے آ پھر رلا کے دیکھ ہمیں

    نظر نہ آئیں گے ہم قہقہوں کی محفل میں

    جو دیکھنا ہے تو آنسو بہا کے دیکھ ہمیں

    ہمارے خواب بہاراں کی آبرو رکھ لے

    کسی کلی کی طرح مسکرا کے دیکھ ہمیں

    ہر ایک غم کو اسی ضد میں بھول جاؤں گا

    وہ کہہ رہے ہیں کہ رزمیؔ بھلا کے دیکھ ہمیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    فراز دار پہ اک دن سجا کے دیکھ ہمیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY