فریاد نہیں شکر ستم کرتے رہیں گے

یادگار حسین نشتر خیرابادی

فریاد نہیں شکر ستم کرتے رہیں گے

یادگار حسین نشتر خیرابادی

MORE BYیادگار حسین نشتر خیرابادی

    فریاد نہیں شکر ستم کرتے رہیں گے

    ہم خود انہیں مجبور کرم کرتے رہیں گے

    کعبے کو شکایت ہے تو ہو اپنے خدا سے

    سجدے تو در یار پہ ہم کرتے رہیں گے

    دنیا کو سنانے کے لئے شعر کی صورت

    جو ہم پہ گزرتی ہے رقم کرتے رہیں گے

    مے خانہ سلامت رہے ہم دور سے نشترؔ

    نظارگیٔ دیر و حرم کرتے رہیں گے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY