غم دل رخ سے عیاں ہو یہ ضروری تو نہیں

ساحر ہوشیار پوری

غم دل رخ سے عیاں ہو یہ ضروری تو نہیں

ساحر ہوشیار پوری

MORE BY ساحر ہوشیار پوری

    غم دل رخ سے عیاں ہو یہ ضروری تو نہیں

    عشق رسوائے جہاں ہو یہ ضروری تو نہیں

    لب پہ ہر وقت فغاں ہو یہ ضروری تو نہیں

    ہم نوا دل کی زباں ہو یہ ضروری تو نہیں

    جان تنہا پہ گزر جائیں ہزاروں صدمے

    آنکھ سے اشک رواں ہو یہ ضروری تو نہیں

    مل ہی جائے گی کہیں ڈھونڈھنے والے کو بہار

    ہر گلستاں میں خزاں ہو یہ ضروری تو نہیں

    ہم جسے اپنی زباں سے بھی نہ کہنے پائیں

    وہ محبت کا بیاں ہو یہ ضروری تو نہیں

    ان کی آنکھوں میں چھلک آئے ہیں آنسو جس سے

    وہ مرے دل کا دھواں ہو یہ ضروری تو نہیں

    ضبط بھی ہوتا ہے انداز جنوں میں شامل

    آرزو شعلہ بہ جاں ہو یہ ضروری تو نہیں

    آرزوؤں کی بھی اک بھیڑ ہے شہر دل میں

    حسرتوں کا ہی نشاں ہو یہ ضروری تو نہیں

    سوچ کر وادئ الفت میں قدم رکھ ساحرؔ

    صرف دل ہی کا زیاں ہو یہ ضروری تو نہیں

    مآخذ:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY