غم جاں گم غم دنیا میں تو ہونا مشکل

حسن اکبر کمال

غم جاں گم غم دنیا میں تو ہونا مشکل

حسن اکبر کمال

MORE BYحسن اکبر کمال

    غم جاں گم غم دنیا میں تو ہونا مشکل

    ہے سمندر کو سمندر میں سمونا مشکل

    نیند جس نے بہت آنکھوں سے اڑا رکھی تھی

    یہ ہوا کیا کہ ہوا اس کو بھی سونا مشکل

    ہر صفت اپنی کہاں دیتا ہے گل خوشبو کو

    خواب دل کے مری آواز میں ہونا مشکل

    یوں زمیں ذائقۂ خوں سے ہوئی ہے مانوس

    اس میں اب فصل محبت کی ہے بونا مشکل

    کل ہمیں ملنے ہیں جو غم وہ ابھی مل جائیں

    آنکھ پتھرائی تو ہو جائے گا رونا مشکل

    وقت کو کھیلنے انسان سے دو جی بھر کے

    پھر کمالؔ اس کو ہے ملنا یہ کھلونا مشکل

    مأخذ :
    • کتاب : Khizan mera Mosam (Pg. 37)
    • Author : Hassan Akbar Kamal
    • مطبع : Seep Publications, karachi (1980)
    • اشاعت : 1980

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY