aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

غم ہائے محبت کا اثر دیکھ رہا ہوں

جنبش خیرآبادی

غم ہائے محبت کا اثر دیکھ رہا ہوں

جنبش خیرآبادی

MORE BYجنبش خیرآبادی

    غم ہائے محبت کا اثر دیکھ رہا ہوں

    بکھرے ہوئے دامن پہ گہر دیکھ رہا ہوں

    اے حسن رخ یار جدھر دیکھ رہا ہوں

    اک حسب تخیل و نظر دیکھ رہا ہوں

    اک نور کی دنیا ہے مری شوق کی منزل

    ہر ذرے کو خورشید‌ نظر دیکھ رہا ہوں

    تم اور ابھی حسن کے پردوں کو اٹھاؤ

    میں آج حد‌ تاب نظر دیکھ رہا ہوں

    ہر آہ شرر‌ خیز ہے مرغان قفس کی

    دامان فغاں شعلہ اثر دیکھ رہا ہوں

    یوں کاکل‌ و رخ اپنے تصور میں ہیں جنبشؔ

    اک مرحلۂ‌ شام و سحر دیکھ رہا ہوں

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے