گر مرے ہاتھ میں ہوتا نہیں ہونے دیتا

خان جانباز

گر مرے ہاتھ میں ہوتا نہیں ہونے دیتا

خان جانباز

MORE BYخان جانباز

    گر مرے ہاتھ میں ہوتا نہیں ہونے دیتا

    میں کبھی چاند کو تجھ سا نہیں ہونے دیتا

    اب تو سب ٹھیک ہے لیکن یہ جو ماضی ہے نا

    آج بھی تجھ پہ بھروسا نہیں ہونے دیتا

    بچ گیا ہے جو ترا تھوڑا سا حصہ مجھ میں

    اب تلک مجھ کو کسی کا نہیں ہونے دیتا

    اس کی تخلیق میں ہوتا جو مرا دخل تو میں

    کسی مٹی کو کھلونا نہیں ہونے دیتا

    ہاں مرض ہے مگر اتنا بھی کوئی خاص نہیں

    چارہ گر خود مجھے اچھا نہیں ہونے دیتا

    میں تو تنہا ہوں مگر اور کسی کو جانبازؔ

    اپنے ہوتے کبھی تنہا نہیں ہونے دیتا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY