گھر کی جب یاد صدا دے تو پلٹ کر آ جائیں

پیرزادہ قاسم

گھر کی جب یاد صدا دے تو پلٹ کر آ جائیں

پیرزادہ قاسم

MORE BYپیرزادہ قاسم

    گھر کی جب یاد صدا دے تو پلٹ کر آ جائیں

    کاش ہم اپنی ہی خواہش کو میسر آ جائیں

    ہے کرامت مرے دل کی ترے ناوک میں نہیں

    وار ہو ایک مگر زخم بہتر آ جائیں

    گفتگو آج تو دو ٹوک کرے گا سورج

    ظل سبحانی شبستان سے باہر آ جائیں

    شب کو یلغار تفکر سے جو بچ نکلوں میں

    صبح دم تازہ خیالات کے لشکر آ جائیں

    اتنی سفاک سماعت بھی غضب ہے کہ جہاں

    بات پوری بھی نہ ہو ہاتھوں میں پتھر آ جائیں

    RECITATIONS

    پیرزادہ قاسم

    پیرزادہ قاسم

    پیرزادہ قاسم

    گھر کی جب یاد صدا دے تو پلٹ کر آ جائیں پیرزادہ قاسم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY