گر بھی جائیں تو نہ مسمار سمجھئے ہم کو

فضیل جعفری

گر بھی جائیں تو نہ مسمار سمجھئے ہم کو

فضیل جعفری

MORE BYفضیل جعفری

    گر بھی جائیں تو نہ مسمار سمجھئے ہم کو

    روشنی سی پس دیوار سمجھئے ہم کو

    ہم بھی آخر ہیں یکے از متوسط طبقہ

    موت کے بعد بھی بیمار سمجھئے ہم کو

    بوسے بیوی کے ہنسی بچوں کی آنکھیں ماں کی

    قید خانے میں گرفتار سمجھئے ہم کو

    وقت معصوم و جری روحوں کے درپئے ہے فضیلؔ

    زندہ جب تک ہیں سر دار سمجھئے ہم کو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY