گو آپ کو ہے عشق ہر اک مہ لقا کے ساتھ

محمد جاوید انور

گو آپ کو ہے عشق ہر اک مہ لقا کے ساتھ

محمد جاوید انور

MORE BYمحمد جاوید انور

    گو آپ کو ہے عشق ہر اک مہ لقا کے ساتھ

    عقد مبین کیجئے عقل رسا کے ساتھ

    منت کی عاجزی بھی کی زاری بھی کی مگر

    اپنا تو کام نکلا تھا جور و جفا کے ساتھ

    یوں تو وفا کی دیویوں کی ایک تھی قطار

    لیکن نبھی تو نبھ گئی اک بے وفا کے ساتھ

    ہر کام میں قرینہ سلیقہ تو چاہئے

    کیا ہے عجب کہ پیار ہو شرم و حیا کے ساتھ

    کیوں خواہ مخواہ زیست کو زنداں بیاں کریں

    گزری ہے عمر اپنی تو اک دل ربا کے ساتھ

    گو زندگی کے اپنے ہی انداز ہیں مگر

    منصف ہے موت ایک سی شاہ و گدا کے ساتھ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY