گلشن میں یہ کمال تجھے دیکھ کر ہوا

منصور عثمانی

گلشن میں یہ کمال تجھے دیکھ کر ہوا

منصور عثمانی

MORE BYمنصور عثمانی

    گلشن میں یہ کمال تجھے دیکھ کر ہوا

    پھولوں کا رنگ لال تجھے دیکھ کر ہوا

    مدت کے بعد آج ملے ہیں تو جان من

    دل کو بہت ملال تجھے دیکھ کر ہوا

    آؤ ہم آج چاند کا قرضہ اتار دیں

    تاروں کو یہ خیال تجھے دیکھ کر ہوا

    خوشبو سے کس زبان میں باتیں کریں گے لوگ

    محفل میں یہ سوال تجھے دیکھ کر ہوا

    اشکوں سے جب لکھیں گے غزل تب سنائیں گے

    اس دل کا جو بھی حال تجھے دیکھ کر ہوا

    مأخذ :
    • کتاب : Kashmakash (Pg. 112)
    • Author : Mansoor Usmani
    • مطبع : Najma House, Baradari, Moradabad (2007)
    • اشاعت : 2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY