گل زار میں جو دور گل لالہ رنگ ہو

لالہ مادھو رام جوہر

گل زار میں جو دور گل لالہ رنگ ہو

لالہ مادھو رام جوہر

MORE BYلالہ مادھو رام جوہر

    گل زار میں جو دور گل لالہ رنگ ہو

    وہ بے حجابیاں ہوں کہ نرگس بھی دنگ ہو

    صیاد و باغباں میں بہت ہوتی ہے صلاح

    ایسا نہ ہو کہیں گل و بلبل میں جنگ ہو

    افسوس موت بھی نہیں آتی شب فراق

    وہ کیا کرے غریب جو جینے سے تنگ ہو

    کافی ہے بوریا ہی فقیروں کے واسطے

    معیوب ہے جو شیروں کے گھر میں پلنگ ہو

    لڑنے کو دل جو چاہے تو آنکھیں لڑائیے

    ہو جنگ بھی اگر تو مزے دار جنگ ہو

    جو دوست ہیں وہ مانگتے ہیں صلح کی دعا

    دشمن یہ چاہتے ہیں کہ آپس میں جنگ ہو

    کوئی مرے کسی کو خوشی ہو خدا کی شان

    ماتم کسی جگہ ہو کہیں ناچ رنگ ہو

    مآخذ:

    • کتاب : Intekhab Kalam Lala M.R Jauhar (Pg. 46)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY