گزر رہی ہے مگر خاصے اضطراب کے ساتھ

فضیل جعفری

گزر رہی ہے مگر خاصے اضطراب کے ساتھ

فضیل جعفری

MORE BYفضیل جعفری

    گزر رہی ہے مگر خاصے اضطراب کے ساتھ

    خیال بھی نظر آنے لگے ہیں خواب کے ساتھ

    تلاش میں ہوں کسی کھردرے کنارے کی

    نباہ اب نہیں ہوتا حباب و آب کے ساتھ

    شب فراق ہے سدھارتھؔ کی طرح گم سم

    حواس بھی ہوئے رخصت ترے حجاب کے ساتھ

    تعلقات کا تنقید سے ہے یارانہ

    کسی کا ذکر کرے کون احتساب کے ساتھ

    جڑی ہوئی ہے ہر اک شخص کی فضیلؔ یہاں

    غرض کسی نہ کسی صاحب نصاب کے ساتھ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY