حالت حال میں کیا رو کے سناؤں تجھ کو

مبشر سعید

حالت حال میں کیا رو کے سناؤں تجھ کو

مبشر سعید

MORE BY مبشر سعید

    حالت حال میں کیا رو کے سناؤں تجھ کو

    تو نظر آئے تو پلکوں پہ بٹھاؤں تجھ کو

    خود کو اس ہوش میں مدہوش بنانے کے لیے

    آیت حسن پڑھوں دیکھتا جاؤں تجھ کو

    تو نہیں مانتا مٹی کا دھواں ہو جانا

    تو ابھی رقص کروں ہو کے دکھاؤں تجھ کو

    کر لیا ایک محبت پہ گزارا میں نے

    چاہتا تھا کہ میں پورا بھی تو آؤں تجھ کو

    اب مرا عشق دھمالوں سے کہیں آگے ہے

    اب ضروری ہے کہ میں وجد میں لاؤں تجھ کو

    کیوں کسی اور کی آنکھوں کا قصیدہ لکھوں

    کیوں کسی اور کی مدحت سے جلاؤں تجھ کو

    عین ممکن ہے ترے عشق میں ضم ہو جاؤں

    اور پھر دھیان کی جنت میں نہ لاؤں تجھ کو

    اس نے اک بار مجھے پیار سے بولا تھا سعیدؔ

    میرا دل ہے کبھی سینے سے لگاؤں تجھ کو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY