ہم سے بات میں پیچ نہ ڈال

انجم رومانی

ہم سے بات میں پیچ نہ ڈال

انجم رومانی

MORE BYانجم رومانی

    ہم سے بات میں پیچ نہ ڈال

    یوں مت دل کے چور نکال

    مرنا ہے تو ڈرنا کیا

    چلتا ہے کیوں چور کی چال

    جوگی کو لوگوں سے کام

    بین بجا اور سانپ نکال

    آج کا جھگڑا آج چکا

    کل کی باتیں کل پر ٹال

    اپنا جھنجھٹ آپ نبیڑ

    اپنی گٹھری آپ سنبھال

    بڑھی ہے اتنی آبادی

    پڑا انسانوں کا کال

    انجمؔ عشق کا دعویٰ تھا

    کیسا حال ہے؟ کیسا حال

    مأخذ :
    • کتاب : Dastavez (Pg. 33)
    • Author : Aziz Nabeel
    • مطبع : Edarah Dastavez (2010)
    • اشاعت : 2010

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY