ہم سے گمراہ زمانے نے کہاں دیکھے ہیں

محشر عنایتی

ہم سے گمراہ زمانے نے کہاں دیکھے ہیں

محشر عنایتی

MORE BYمحشر عنایتی

    ہم سے گمراہ زمانے نے کہاں دیکھے ہیں

    ہم نے مٹتے ہوئے قدموں کے نشاں دیکھے ہیں

    آپ نے دیکھ کے ہر اک کو نظر پھیری ہے

    آپ نے صاحب احساس کہاں دیکھے ہیں

    زندگی سیدھی سی اک راہ نہیں ہے اے دوست

    اس میں جو موڑ ہیں وہ تو نے کہاں دیکھے ہیں

    دل جہاں لرزے امیدوں کا تصور کر کے

    میں نے امید کے آثار وہاں دیکھے ہیں

    اٹھ گئی آنکھ اگر میری تو جم جائے گی

    آپ نے دیدۂ ہر سو نگراں دیکھے ہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    ہم سے گمراہ زمانے نے کہاں دیکھے ہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY