ہمارے پاؤں ڈرتے ہیں تمہارے ساتھ چلنے میں

شیو کمار بلگرامی

ہمارے پاؤں ڈرتے ہیں تمہارے ساتھ چلنے میں

شیو کمار بلگرامی

MORE BYشیو کمار بلگرامی

    ہمارے پاؤں ڈرتے ہیں تمہارے ساتھ چلنے میں

    ذرا سا وقت لگتا ہے کبھی نیت بدلنے میں

    تمہیں شاید پتا ہو یا نہ ہو شاید پتا تم کو

    کہ سالوں سال لگتے ہیں چبھا کانٹا نکلنے میں

    کسی پتھر کی مورت سے نہ کرنا پیار تم ہرگز

    ہزاروں سال لگتے ہیں بتوں کا دل پگھلنے میں

    ذرا سا وقت تو دے زندگی مجھ کو سنبھلنے کا

    برا ہو وقت تو کچھ وقت لگتا ہے سنبھلنے میں

    نہ جانے کیوں بجھی آنکھوں میں جگنوں سے چمکتے ہیں

    ابھی تو وقت باقی ہے اندھیری رات ڈھلنے میں

    مآخذ :
    • کتاب : Nai Kahkashan (Pg. 94)
    • Author : Shivkumar Bilagrami
    • مطبع : Amrit Prakashan (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY