ہر چند بھرے دل میں ہیں لاکھوں ہی گلے پر

جرأت قلندر بخش

ہر چند بھرے دل میں ہیں لاکھوں ہی گلے پر

جرأت قلندر بخش

MORE BY جرأت قلندر بخش

    ہر چند بھرے دل میں ہیں لاکھوں ہی گلے پر

    کیا کہئے کہ کھلتا نہیں منہ وقت ملے پر

    بے درد وہ ایسا ہے کہ مرہم کی جگہ ہائے

    چھڑکے ہے نمک میرے ہر اک زخم چھلے پر

    تا دل کو نہ واشد ہو تو کیا لطف ملے ہائے

    کھلتی ہے جو بو غنچۂ گل کی تو کھلے پر

    مشہور جوانی میں ہو وہ کیوں نہ جگت باز

    میلان طبیعت تھا لڑکپن سے ضلے پر

    ہم گلشن حیرت میں ہیں پرواز کہاں کی

    جوں بلبل تصویر کبھی ٹک نہ ہلے پر

    سن وصف دہن دیجئے کچھ منہ سے پیارے

    مجھ شاعر مفلس کی ہے گزران صلے پر

    کس منہ سے بیاں کیجئے وہ لطف کہ جرأتؔ

    دشنام جو واں ملتی ہیں ٹک آنکھ ملے پر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY