ہر ایک رات کو مہتاب دیکھنے کے لیے

اظہر عنایتی

ہر ایک رات کو مہتاب دیکھنے کے لیے

اظہر عنایتی

MORE BY اظہر عنایتی

    ہر ایک رات کو مہتاب دیکھنے کے لیے

    میں جاگتا ہوں ترا خواب دیکھنے کے لیے

    نہ جانے شہر میں کس کس سے جھوٹ بولوں گا

    میں گھر کے پھولوں کو شاداب دیکھنے کے لیے

    اسی لیے میں کسی اور کا نہ ہو جاؤں

    مجھے وہ دے گیا اک خواب دیکھنے کے لیے

    کسی نظر میں تو رہ جائے آخری منظر

    کوئی تو ہو مجھے غرقاب دیکھنے کے لیے

    عجیب سا ہے بہانا مگر تم آ جانا

    ہمارے گاؤں کا سیلاب دیکھنے کے لیے

    پڑوسیوں نے غلط رنگ دے دیا اظہرؔ

    وہ چھت پہ آیا تھا مہتاب دیکھنے کے لیے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    اظہر عنایتی

    اظہر عنایتی

    RECITATIONS

    اظہر عنایتی

    اظہر عنایتی

    اظہر عنایتی

    ہر ایک رات کو مہتاب دیکھنے کے لیے اظہر عنایتی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY