ہر اک دیوار ہر اک در ہمارا

ابان آصف کچکر

ہر اک دیوار ہر اک در ہمارا

ابان آصف کچکر

MORE BYابان آصف کچکر

    ہر اک دیوار ہر اک در ہمارا

    ملیں گر بن نہیں ہے گھر ہمارا

    رقابت دور سے کریو ہماری

    مقرر شعر ہے دیگر ہمارا

    جہاں پر جا کے آمادہ پڑھو ہو

    وہاں پر ذکر ہے دن بھر ہمارا

    شتابی ہے نہیں ہم کو سخن کی

    ہمیں انداز ہے اندر ہمارا

    نشاں اپنا نہ پوچھو ہے کدھر تک

    ہمارا ہے ادھر اودھر ہمارا

    غلامی تم کرو اپنا زماں ہے

    حکم نیچے سے ہے اوپر ہمارا

    فقیری سے سبکدوشی ملے کب

    عدم سے قبل ہے محشر ہمارا

    ابانؔ در بہ در یہ چاک جیبی

    کسو سے جل گیا بستر ہمارا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY