ہر لمحہ ظلمتوں کی خدائی کا وقت ہے

احمد مشتاق

ہر لمحہ ظلمتوں کی خدائی کا وقت ہے

احمد مشتاق

MORE BYاحمد مشتاق

    ہر لمحہ ظلمتوں کی خدائی کا وقت ہے

    شاید کسی کی چہرہ نمائی کا وقت ہے

    کہتی ہے ساحلوں سے یہ جاتے سمے کی دھوپ

    ہشیار ندیوں کی چڑھائی کا وقت ہے

    ہوتی ہے شام آنکھ سے آنسو رواں ہوئے

    یہ وقت قیدیوں کی رہائی کا وقت ہے

    کوئی بھی وقت ہو کبھی ہوتا نہیں جدا

    کتنا عزیز اس کی جدائی کا وقت ہے

    دل نے کہا کہ شام شب وصل سے نہ بھاگ

    اب پک چکی ہے فصل کٹائی کا وقت ہے

    میں نے کہا کہ دیکھ یہ میں یہ ہوا یہ رات

    اس نے کہا کہ میری پڑھائی کا وقت ہے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    ہر لمحہ ظلمتوں کی خدائی کا وقت ہے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY