ہر شاخ پہ تھی وفا کی قندیل (ردیف .. ے)

ابو الحسنات حقی

ہر شاخ پہ تھی وفا کی قندیل (ردیف .. ے)

ابو الحسنات حقی

MORE BYابو الحسنات حقی

    ہر شاخ پہ تھی وفا کی قندیل

    اے شہر بتا کہاں وہ بن ہے

    بجتی ہوئی خون کی روانی

    خواہش کی گرفت میں بدن ہے

    لڑتے لڑتے بکھر گئے ہیں

    اب جو بھی جہاں ہے نعرہ زن ہے

    ہر جہت مجھے پکارتی ہے

    ہر سمت وہ رنگ پیرہن ہے

    لیتا ہے وجود گرم سانسیں

    ایک شعلۂ شوق وہ بدن ہے

    یہ کون دھنک نہا کے نکلی

    گل بوٹا چمن چمن ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Imkaan-e-roz-o-shab (Pg. 149)
    • Author : Syed Abul Hasnat Haqqi
    • مطبع : Educational Publishing House (2011)
    • اشاعت : 2011

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY