ہر وقت مرے سامنے اک جلوہ گری ہے

یونس تحسین

ہر وقت مرے سامنے اک جلوہ گری ہے

یونس تحسین

MORE BYیونس تحسین

    ہر وقت مرے سامنے اک جلوہ گری ہے

    میں دیکھ نہ پاؤں تو مری کم نظری ہے

    میں آنکھ جھپکتا ہوں تو منظر نہیں رہتا

    اے حسن دل آویز عجب مختصری ہے

    سوچوں تو یہاں کچھ بھی نہیں دیکھنے قابل

    دیکھوں تو تری دنیا بڑی رنگ بھری ہے

    دکھ درد یہاں آئیں تو واپس نہیں جاتے

    یہ دل کوئی آسیب زدہ بارہ دری ہے

    میں دشت میں آ کر بھی کہاں چین سے بیٹھا

    یاں پر بھی وہی عشق وہی در بدری ہے

    پیارے مرے الفاظ کو تو بار دگر دیکھ

    یہ شعر نہیں نوحۂ بے بال و پری ہے

    یہ فیض ملا عشق میں دریوزہ گری سے

    سلطانی مرے نقش کف پا پہ دھری ہے

    تحسینؔ مضامین غزل اور نکالو

    یہ دور محبت کی مصیبت سے بری ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY