حریم لفظ میں کس درجہ بے ادب نکلا

افتخار عارف

حریم لفظ میں کس درجہ بے ادب نکلا

افتخار عارف

MORE BY افتخار عارف

    حریم لفظ میں کس درجہ بے ادب نکلا

    جسے نجیب سمجھتے تھے کم نسب نکلا

    سپاہ شام کے نیزے پہ آفتاب کا سر

    کس اہتمام سے پروردگار شب نکلا

    ہماری گرمئ گفتار بھی رہی بے سود

    کسی کی چپ کا بھی مطلب عجب عجب نکلا

    بہم ہوئے بھی مگر دل کی وحشتیں نہ گئیں

    وصال میں بھی دلوں کا غبار کب نکلا

    ابھی اٹھا بھی نہیں تھا کسی کا دست کرم

    کہ سارا شہر لیے کاسۂ طلب نکلا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY