ہزار کوشش پیہم کے باوجود ہمیں (ردیف .. ا)

نبیل احمد نبیل

ہزار کوشش پیہم کے باوجود ہمیں (ردیف .. ا)

نبیل احمد نبیل

MORE BYنبیل احمد نبیل

    ہزار کوشش پیہم کے باوجود ہمیں

    تمام عمر کوئی دوست با وفا نہ ملا

    کہاں کا وصل ملاقات ہی غنیمت ہے

    پھر اس کے بعد وہ ہم سے ملا ملا نہ ملا

    وہ جس کو ہم نے زمانے سے بڑھ کے چاہا تھا

    اس ایک شخص کی چاہت میں کچھ مزا نہ ملا

    تری جدائی کے صحرا میں کھو گئے ایسے

    سراغ اپنا کہیں اور کہیں پتا نہ ملا

    یہ کائنات کہ بے رنگ ہوتی جاتی ہے

    جو دل کا رنگ دکھاتی وہ آئنہ نہ ملا

    تلاشتے رہے کانٹوں میں پھول سے پیکر

    مزاج ہم کو ازل سے ہی عاشقانہ ملا

    تمام عمر ہی رستوں کی خاک چھانی ہے

    ہمیں تو منزل ہستی ترا پتا نہ ملا

    ہمیں جو راہ دکھاتا قدم قدم پہ نبیلؔ

    مثال خضر کوئی ایسا رہنما نہ ملا

    خود آپ اپنے مقابل میں آ گئے ہیں نبیلؔ

    ہمیں مزاج ملا بھی تو باغیانہ ملا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY