ہوئے ہیں جا کے عاشق اب تو ہم اس شوخ چنچل کے

تاباں عبد الحی

ہوئے ہیں جا کے عاشق اب تو ہم اس شوخ چنچل کے

تاباں عبد الحی

MORE BYتاباں عبد الحی

    ہوئے ہیں جا کے عاشق اب تو ہم اس شوخ چنچل کے

    ستم گر بے مروت بے وفا بے رحم اچپل کے

    غزالوں کو تری آنکھیں سے کچھ نسبت نہیں ہرگز

    کہ یہ آہو ہیں شہری اور وے وحشی ہیں جنگل کے

    گرفتاری ہوئی ہے دل کو میرے بے طرح اس سے

    کہ آئے پیچ میں کہتے ہی ان کی زلف کے بل کے

    یہ دولت مند اگر شب کو نہیں یارو تو پھر کیا ہے

    کہ ہیں یہ چاندنی راتوں کو بھی محتاج مشعل کے

    تمہارے درد سر سے صندلی رنگو اگر جی دوں

    تو چھاپے قبر پر دینا مری تم آ کے صندل کے

    کوئی اس کو کہے ہے دام کوئی زنجیر کوئی سنبل

    ہزاروں نام ہیں کافر تری زلف مسلسل کے

    بیاباں بن ہمیں الفت نہیں ہے شہر سے ہرگز

    طرح مجنوں کے تاباںؔ ہم تو دیوانے ہیں جنگل کے

    مأخذ :
    • Deewan-e-Taban Rekhta Website)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY