Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ہوئی جو رات پہلو میں خوشی سے مر گئے ہم تو (ردیف .. ا)

دناکشی سحر

ہوئی جو رات پہلو میں خوشی سے مر گئے ہم تو (ردیف .. ا)

دناکشی سحر

MORE BYدناکشی سحر

    ہوئی جو رات پہلو میں خوشی سے مر گئے ہم تو

    اگر تیرے ہی آنگن میں سحر ہوتی تو کیا ہوتا

    گزر تو یوں بھی جائے گی کڑکتی دھوپ میں تنہا

    ترے دامن کے سائے میں بسر ہوتی تو کیا ہوتا

    ہزاروں راستے وا تھے مگر تجھ تک جو پہنچاتی

    کہیں وہ ایک چھوٹی سی ڈگر ہوتی تو کیا ہوتا

    تری اس سرد مہری میں کسک سی بھی نمایاں ہے

    خدایا یہ نوازش بھی نہ گر ہوتی تو کیا ہوتا

    تری سب داستانوں میں مرے قصہ لکھے ہوتے

    دعا وہ ایک میری با اثر ہوتی تو کیا ہوتا

    بہت ہی پر سکوں نکلے ترے آغوش سے پھر ہم

    کہ یہ آسودگی آٹھوں پہر ہوتی تو کیا ہوتا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے