حجرہ خواب سے باہر نکلا

حماد نیازی

حجرہ خواب سے باہر نکلا

حماد نیازی

MORE BYحماد نیازی

    حجرہ خواب سے باہر نکلا

    کون یہ میرے برابر نکلا

    پھڑپھڑایا مرے باہر کوئی

    اور پرندہ مرے اندر نکلا

    آنکھ سے اشک نکل آئے ہیں

    ریت سے جیسے سمندر نکلا

    ہجر کو خواب میں دیکھا اک دن

    اور پھر خواب مقدر نکلا

    میرے پیچھے مری وحشت بھاگی

    میں جو دیوار گرا کر نکلا

    آنکھ بینائی گنوا بیٹھی تو

    تیری تصویر سے منظر نکلا

    رات سینے کی حویلی گونجی

    اور دل شور مچا کر نکلا

    شام پھیلی تو کھلا از سر نو

    میرا سایہ مرا پیکر نکلا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY