حجرۂ ذات سے باہر تو نکل کر دیکھو

پیرزادہ قاسم

حجرۂ ذات سے باہر تو نکل کر دیکھو

پیرزادہ قاسم

MORE BYپیرزادہ قاسم

    حجرۂ ذات سے باہر تو نکل کر دیکھو

    تم کسی دوسرے پیکر میں بھی ڈھل کر دیکھو

    کیا عجب تم کو ہی یہ ہم سفری راس آ جائے

    دو قدم ہی سہی تم ساتھ تو چل کر دیکھو

    ہاں یہ دستار فضیلت بھی قبائے زر بھی

    خود کو دیکھو تو یہ پوشاک بدل کر دیکھو

    موسم ہجر کوئی رت ہے نہ کچھ آب و ہوا

    اک تقاضا ہے کہ پھر گھر سے نکل کر دیکھو

    مات ہو جائے مگر حوصلۂ دل کے لیے

    آخری چال جو باقی ہے وہ چل کر دیکھو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY