حکم صیاد ہے تا ختم تماشائے بہار

قمر جلالوی

حکم صیاد ہے تا ختم تماشائے بہار

قمر جلالوی

MORE BY قمر جلالوی

    حکم صیاد ہے تا ختم تماشائے بہار

    ساری دنیا کہے بلبل نہ کہے ہائے بہار

    صبح گلگشت کو جاتے ہو کہ شرمائے بہار

    کیا یہ مطلب ہے گلستاں سے نکل جائے بہار

    منہ سے کچھ بھی دم رخصت نہ کہا بلبل نے

    صرف صیاد نے اتنا تو سنا ہائے بہار

    یہ بھی کچھ بات ہوئی گل ہنسے تم روٹھ گئے

    اس پہ یہ ضد کہ ابھی خاک میں مل جائے بہار

    تیرے قربان قمرؔ منہ سر گلزار نہ کھول

    صدقے اس چاند سی صورت پہ نہ ہو جائے بہار

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    حکم صیاد ہے تا ختم تماشائے بہار نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY