ہنر زخم نمائی بھی نہیں

راغب اختر

ہنر زخم نمائی بھی نہیں

راغب اختر

MORE BYراغب اختر

    ہنر زخم نمائی بھی نہیں

    صلۂ آبلہ پائی بھی نہیں

    درد سر اب ترے ہونے کا سبب

    اب تو وہ دست حنائی بھی نہیں

    میں نے ہر رنگ سمیٹا اس کا

    اور تصویر بنائی بھی نہیں

    بندگی بھی نہ مجھے راس آئی

    اور پندار خدائی بھی نہیں

    جل گیا جس میں مرا سارا وجود

    تو نے وہ آگ لگائی بھی نہیں

    اے خدا بخت سکندر مت دے

    اور کشکول گدائی بھی نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY