aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

حسن غمزے کی کشاکش سے چھٹا میرے بعد

مرزا غالب

حسن غمزے کی کشاکش سے چھٹا میرے بعد

مرزا غالب

MORE BYمرزا غالب

    حسن غمزے کی کشاکش سے چھٹا میرے بعد

    بارے آرام سے ہیں اہل جفا میرے بعد

    منصب شیفتگی کے کوئی قابل نہ رہا

    ہوئی معزولی انداز و ادا میرے بعد

    شمع بجھتی ہے تو اس میں سے دھواں اٹھتا ہے

    شعلۂ عشق سیہ پوش ہوا میرے بعد

    خوں ہے دل خاک میں احوال بتاں پر یعنی

    ان کے ناخن ہوئے محتاج حنا میرے بعد

    در خور عرض نہیں جوہر بیداد کو جا

    نگہ ناز ہے سرمے سے خفا میرے بعد

    ہے جنوں اہل جنوں کے لیے آغوش وداع

    چاک ہوتا ہے گریباں سے جدا میرے بعد

    کون ہوتا ہے حریف مے مرد افگن عشق

    ہے مکرر لب ساقی پہ صلا میرے بعد

    غم سے مرتا ہوں کہ اتنا نہیں دنیا میں کوئی

    کہ کرے تعزیت مہر و وفا میرے بعد

    آئے ہے بیکسی عشق پہ رونا غالبؔ

    کس کے گھر جائے گا سیلاب بلا میرے بعد

    تھی نگہ میری نہاں خانۂ دل کی نقاب

    بے خطر جیتے ہیں ارباب ریا میرے بعد

    تھا میں گلدستۂ احباب کی بندش کی گیاہ

    متفرق ہوئے میرے رفقا میرے بعد

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مہدی حسن

    مہدی حسن

    حامد علی خان

    حامد علی خان

    ذوالفقار علی بخاری

    ذوالفقار علی بخاری

    بیگم اختر

    بیگم اختر

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    حسن غمزے کی کشاکش سے چھٹا میرے بعد نعمان شوق

    مأخذ:

    دیوان غالب جدید (Pg. 211)

    • مصنف: مرزا غالب
      • ناشر: مدھیہ پردیش اردو اکیڈمی، بھوپال
      • سن اشاعت: 1982

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے