اک منتظر وعدہ کی شمع جلی ہوگی

علیم مسرور

اک منتظر وعدہ کی شمع جلی ہوگی

علیم مسرور

MORE BYعلیم مسرور

    اک منتظر وعدہ کی شمع جلی ہوگی

    سورج کے نکلنے سے کیا رات ڈھلی ہوگی

    بتلائیں ٹھکانا کیا چھٹے ہوئے گلشن میں

    گزرو گے تو دیکھو گے اک شاخ جلی ہوگی

    بس ایک تمنا ہو جس کے دل ویراں میں

    سوچو تو ذرا کتنے نازوں کی پلی ہوگی

    نکلے تری محفل سے تو ساتھ نہ تھا کوئی

    شاید مری رسوائی کچھ دور چلی ہوگی

    کل رات جو میں گزرا اک نور کا تڑکا تھا

    مسرورؔ بتاؤ تو وہ کس کی گلی ہوگی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY