اک نظر ہی دیکھا تھا شوق نے شباب ان کا

جگن ناتھ آزاد

اک نظر ہی دیکھا تھا شوق نے شباب ان کا

جگن ناتھ آزاد

MORE BYجگن ناتھ آزاد

    اک نظر ہی دیکھا تھا شوق نے شباب ان کا

    دن کو یاد ہے ان کی رات کو ہے خواب ان کا

    گر گئے نگاہوں سے پھول بھی ستارے بھی

    میں نے جب سے دیکھا ہے عالم شباب ان کا

    ناصحوں نے شاید یہ بات ہی نہیں سوچی

    اک طرف ہے دل میرا اک طرف شباب ان کا

    اے دل ان کے چہرے تک کس طرح نظر جاتی

    نور ان کے چہرے کا بن گیا حجاب ان کا

    اب کہوں تو میں کس سے میرے دل پہ کیا گزری

    دیکھ کر ان آنکھوں میں درد اضطراب ان کا

    حشر کے مقابل میں حشر ہی صف آرا ہے

    اس طرف جنوں میرا اس طرف شباب ان کا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY