علاج زخم دل ہوتا ہے غم خواری بھی ہوتی ہے

ملک زادہ منظور احمد

علاج زخم دل ہوتا ہے غم خواری بھی ہوتی ہے

ملک زادہ منظور احمد

MORE BYملک زادہ منظور احمد

    علاج زخم دل ہوتا ہے غم خواری بھی ہوتی ہے

    مگر مقتل کی میرے خوں سے گل کاری بھی ہوتی ہے

    وہی قاتل وہی منصف عدالت اس کی وہ شاہد

    بہت سے فیصلوں میں اب طرف داری بھی ہوتی ہے

    یہ ہے طرفہ تماشا کربلائے عصر حاضر کا

    گھروں میں قاتلوں کے اب عزا داری بھی ہوتی ہے

    تعلق ان سے ٹوٹا تھا نہ ٹوٹا ہے نہ ٹوٹے گا

    بہت مضبوط زنجیر وفاداری بھی ہوتی ہے

    وہ میرا دوست ہے منظورؔ لیکن جب بھی ملتا ہے

    خلوص دل میں شامل کچھ ریاکاری بھی ہوتی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY