ان آنکھوں سے آب کچھ نہ نکلا

مصحفی غلام ہمدانی

ان آنکھوں سے آب کچھ نہ نکلا

مصحفی غلام ہمدانی

MORE BYمصحفی غلام ہمدانی

    ان آنکھوں سے آب کچھ نہ نکلا

    غیر از خوں ناب کچھ نہ نکلا

    بوسے کا کیا سوال لیکن

    اس منہ سے جواب کچھ نہ نکلا

    باہم ہوئی یوں تو دید وا دید

    پر دل کا حجاب کچھ نہ نکلا

    جز تیری ہوا کے اپنے سر میں

    مانند حباب کچھ نہ نکلا

    کرتا تھا بہت سا مجھ پہ دعویٰ

    پر وقت حساب کچھ نہ نکلا

    سینے میں جو دل کی کی تفحص

    جز دود کباب کچھ نہ نکلا

    ہم سمجھے تھے جس کو مصحفیؔ یار

    وہ خانہ خراب کچھ نہ نکلا

    مآخذ :
    • کتاب : Ghazal Usne Chhedi(2) (Pg. 54)
    • Author : Farhat Ehsas
    • مطبع : Rekhta Books (2017)
    • اشاعت : 2017

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY