ارادہ ہو اٹل تو معجزہ ایسا بھی ہوتا ہے

ظفر گورکھپوری

ارادہ ہو اٹل تو معجزہ ایسا بھی ہوتا ہے

ظفر گورکھپوری

MORE BYظفر گورکھپوری

    ارادہ ہو اٹل تو معجزہ ایسا بھی ہوتا ہے

    دیے کو زندہ رکھتی ہے ہوا ایسا بھی ہوتا ہے

    سنائی دے نہ خود اپنی صدا ایسا بھی ہوتا ہے

    میاں تنہائی کا اک سانحہ ایسا بھی ہوتا ہے

    چھڑے ہیں تار دل کے خانہ بربادی کے نغمے ہیں

    ہمارے گھر میں صاحب رت جگا ایسا بھی ہوتا ہے

    بہت حساس ہونے سے بھی شک کو راہ ملتی ہے

    کہیں اچھا تو لگتا ہے برا ایسا بھی ہوتا ہے

    کسی معصوم بچے کے تبسم میں اتر جاؤ

    تو شاید یہ سمجھ پاؤ خدا ایسا بھی ہوتا ہے

    زباں پر آ گئے چھالے مگر یہ تو کھلا ہم پر

    بہت میٹھے پھلوں کا ذائقہ ایسا بھی ہوتا ہے

    مآخذ :
    • کتاب : Ghazal Calendar-2015 (Pg. 29.08.2015)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY