اس جہاں میں بھی کہیں اپنا سہارا کوئی ہے

تاشی ظہیر

اس جہاں میں بھی کہیں اپنا سہارا کوئی ہے

تاشی ظہیر

MORE BYتاشی ظہیر

    اس جہاں میں بھی کہیں اپنا سہارا کوئی ہے

    آسمانوں میں بھی لگتا ہے ہمارا کوئی ہے

    یوں تو کہنے کو سبھی سے ہیں مراسم اپنے

    مان لیں کیسے کہ ان سب میں ہمارا کوئی ہے

    شوق سے جان پہ سہہ لیں جو ہمیں ہو معلوم

    فیصلہ ہے یہ اب اس کا کہ اشارا کوئی ہے

    کاٹ لیتا ہے شب و روز تو وہ بھی آخر

    جس کی منزل ہے نہ رستہ نہ ستارہ کوئی ہے

    اے شب ہجر ستاتی ہے ہمیں کیوں ناحق

    ہم رہے اس کے نہ اب وہ ہی ہمارا کوئی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY