اس شہر سنگ سخت سے گھبرا گیا ہوں میں

خلیل مامون

اس شہر سنگ سخت سے گھبرا گیا ہوں میں

خلیل مامون

MORE BYخلیل مامون

    اس شہر سنگ سخت سے گھبرا گیا ہوں میں

    جنگل کی خوشبوؤں کی طرف جا رہا ہوں میں

    منظر کو دیکھ دیکھ کے آنکھیں چلی گئیں

    ہاتھوں سے آج اپنا بدن ڈھونڈھتا ہوں میں

    چلا رہا ہے کوئی میرے لمس کے لیے

    اندھیاری وادیوں سے نکل بھاگتا ہوں میں

    قاتل کے ہاتھ میں کوئی تلوار ہے نہ تیغ

    وہ مسکرا رہا ہے مرا جا رہا ہوں میں

    مجھ کو وہ میرے دل کے عوض دے سکیں گے کیا

    مامونؔ دنیا والوں سے کیا مانگتا ہوں میں

    مآخذ:

    • کتاب : Sanson Ke Paar (Pg. 290)
    • Author : Khalil Mamoon
    • مطبع : Educational Publishing House, Delhi (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY