عشق میں صبر و رضا درکار ہے

ولی محمد ولی

عشق میں صبر و رضا درکار ہے

ولی محمد ولی

MORE BYولی محمد ولی

    عشق میں صبر و رضا درکار ہے

    فکر اسباب وفا درکار ہے

    چاک کرنے جامۂ صبر و قرار

    دلبر رنگیں قبا درکار ہے

    ہر صنم تسخیر دل کیونکر سکے

    دل ربائی کوں ادا درکار ہے

    زلف کوں وا کر کہ شاہ عشق کوں

    سایۂ بال ہما درکار ہے

    رکھ قدم مجھ دیدۂ خوں بار پر

    گر تجھے رنگ حنا درکار ہے

    دیکھ اس کی چشم شہلا کوں اگر

    نرگس باغ حیا درکار ہے

    عزم اس کے وصل کا ہے اے ولیؔ

    لیکن امداد خدا درکار ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY