اسی بکھرے ہوئے لہجے پہ گزارے جاؤ

رؤف رضا

اسی بکھرے ہوئے لہجے پہ گزارے جاؤ

رؤف رضا

MORE BYرؤف رضا

    اسی بکھرے ہوئے لہجے پہ گزارے جاؤ

    ورنہ ممکن ہے کہ چپ رہنے سے مارے جاؤ

    ڈوبنا ہے تو چھلکتی ہوئی آنکھیں ڈھونڈھو

    یا کسی ڈوبتے دریا کے کنارے جاؤ

    وہ یہ کہتے ہیں صدا ہو تو تمہارے جیسی

    اس کا مطلب تو یہی ہے کہ پکارے جاؤ

    تم ہی کہتے تھے رضاؔ فرق دوئی ختم کرو

    جاؤ اب اپنی ہی تصویر نہارے جاؤ

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    رؤف رضا

    رؤف رضا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY