اتنی بار محبت کرنا کتنا مشکل ہو جاتا ہے

علی عمران

اتنی بار محبت کرنا کتنا مشکل ہو جاتا ہے

علی عمران

MORE BYعلی عمران

    اتنی بار محبت کرنا کتنا مشکل ہو جاتا ہے

    انسانوں پہ ہجرت کرنا کتنا مشکل ہو جاتا ہے

    شب بھر تاروں کو گننے میں کتنی دشواری ہے یار

    جاگتے رہنا عادت کرنا کتنا مشکل ہو جاتا ہے

    میرے اندر کی سب راتیں سائے جتنی رہتی ہیں

    تاریکی سے صحبت کرنا کتنا مشکل ہو جاتا ہے

    کتنا مشکل ہو جاتا ہے کرنا اور نہ کرنا سب

    یہ کرنا تم یہ مت کرنا کتنا مشکل ہو جاتا ہے

    تجھ کو چھونے کی خواہش میں پل پل جلتا رہتا ہوں

    تیرے جسم کی حسرت کرنا کتنا مشکل ہو جاتا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY