جانب کوچہ و بازار نہ دیکھا جائے

مخمور سعیدی

جانب کوچہ و بازار نہ دیکھا جائے

مخمور سعیدی

MORE BYمخمور سعیدی

    جانب کوچہ و بازار نہ دیکھا جائے

    غور سے شہر کا کردار نہ دیکھا جائے

    کھڑکیاں بند کریں چھپ کے گھروں میں بیٹھیں

    کیا سماں ہے پس دیوار نہ دیکھا جائے

    سرخیاں خون میں ڈوبی ہیں سب اخباروں کی

    آج کے دن کوئی اخبار نہ دیکھا جائے

    شہر کا شہر گنہ گار تو ہو سکتا ہے

    جب کہیں کوئی گنہ گار نہ دیکھا جائے

    دشت سے کم نہیں ویراں کوئی بستی مخمورؔ

    یہ ہجوم در و دیوار نہ دیکھا جائے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    جانب کوچہ و بازار نہ دیکھا جائے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY