جب بھی دل کھول کے روئے ہوں گے

احمد فراز

جب بھی دل کھول کے روئے ہوں گے

احمد فراز

MORE BY احمد فراز

    جب بھی دل کھول کے روئے ہوں گے

    لوگ آرام سے سوئے ہوں گے

    بعض اوقات بہ مجبوریٔ دل

    ہم تو کیا آپ بھی روئے ہوں گے

    صبح تک دست صبا نے کیا کیا

    پھول کانٹوں میں پروئے ہوں گے

    وہ سفینے جنہیں طوفاں نہ ملے

    ناخداؤں نے ڈبوئے ہوں گے

    رات بھر ہنستے ہوئے تاروں نے

    ان کے عارض بھی بھگوئے ہوں گے

    کیا عجب ہے وہ ملے بھی ہوں فرازؔ

    ہم کسی دھیان میں کھوئے ہوں گے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    حسین بخش

    حسین بخش

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    جب بھی دل کھول کے روئے ہوں گے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY