جب دعائیں بھی کچھ اثر نہ کریں

جوشؔ ملسیانی

جب دعائیں بھی کچھ اثر نہ کریں

جوشؔ ملسیانی

MORE BY جوشؔ ملسیانی

    جب دعائیں بھی کچھ اثر نہ کریں

    کیا کریں صبر ہم اگر نہ کریں

    داستاں ختم ہو ہی جائے گی

    آپ قصہ کو مختصر نہ کریں

    چھوڑتا ہی نہیں ہمیں صیاد

    ورنہ پروائے بال و پر نہ کریں

    قابل عفو میں نہیں نہ سہی

    نہ کریں آپ درگزر نہ کریں

    ان کو احساس درد دل کیسا

    مر بھی جاؤں تو آنکھ تر نہ کریں

    اس کی بے چارگی کا کیا کہنا

    جس کی آہیں بھی کچھ اثر نہ کریں

    یہ بھی تشہیر شاعری ہے جوشؔ

    آپ دیوان مشتہر نہ کریں

    مآخذ:

    • کتاب : Mujalla Dastavez (Pg. 116)
    • Author : Aziz Nabeel
    • مطبع : Edarah Dastavez (2013-14)
    • اشاعت : 2013-14

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY