جب ہجوم غم سے جی گھبرا گیا

شارق میرٹھی

جب ہجوم غم سے جی گھبرا گیا

شارق میرٹھی

MORE BYشارق میرٹھی

    جب ہجوم غم سے جی گھبرا گیا

    جانے کیوں لب پر ترا نام آ گیا

    آہ شارقؔ اب مری حالت نہ پوچھ

    دل دہی سے اور وہ تڑپا گیا

    دل پہ جو گزرے وہ سہہ لیتا ہوں میں

    اب مجھے ہر زہر پینا آ گیا

    آب دیدہ جب نظر آیا کوئی

    یاد اک بھولا فسانہ آ گیا

    بجلیوں میں گھر کے اے شارقؔ ہمیں

    آشیانے کا بنانا آ گیا

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY