جب کبھی ہوں گے تو ہم مائل غم ہی ہوں گے

بشر نواز

جب کبھی ہوں گے تو ہم مائل غم ہی ہوں گے

بشر نواز

MORE BYبشر نواز

    جب کبھی ہوں گے تو ہم مائل غم ہی ہوں گے

    ایسے دیوانے بھی اس دور میں کم ہی ہوں گے

    ہم تو زخموں پہ بھی یہ سوچ کے خوش ہوتے ہیں

    تحفۂ دوست ہیں جب یہ تو کرم ہی ہوں گے

    بزم عالم میں جب آئے ہیں تو بیٹھیں کچھ اور

    بس یہی ہوگا نا کچھ اور ستم ہی ہوں گے

    جب بھی برباد وفا کوئی نظر آئے تمہیں

    غور سے دیکھ لیا کرنا وہ ہم ہی ہوں گے

    کوئی بھٹکا ہوا بادل کوئی اڑتی خوشبو

    کون کہہ سکتا ہے اک دن یہ بہم ہی ہوں گے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY